تصویر کا کیپشن : یوپی پریس کلب لکھنؤ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے الانصاف پبلک فائونڈیشن کے صدر مفتی سالم یمنی چائسی

قومی یکجہتی کافروغ وقت کی اہم ضرورت:مفتی سالم یمنی

الانصاف پبلک فائونڈیشن کے زیر اہتمام یوپی پریس کلب میں پریس کانفرنس کا انعقاد

سعید ہاشمی

لکھنؤ : ملک کے موجودہ تشویشناک حالات کے پیش نظر ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ قومی یکجہتی اور بقائے باہمی کے پیغام کو لوگوں تک پہنچائیں اور انسانیت کی بنیاد پر باہمی اتفاق کا مظاہرہ کریں ، اس لئے کہ انسانیت اور ایکتا ایک قیمتی جوہر ہے جس کی ترویج واشاعت اور تحفظ وقت کی اہم ضرورت ہے ، مذکورہ خیالات کا اظہار الانصاف پبلک فائونڈیشن کے قومی صدر مفتی سالم یمنی چائسی نے یہاں پریس کلب لکھنؤ میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران صحافیوں سے گفتگو کے دوران کہیں ۔ایک سوال کے جواب میں مفتی سالم یمنی نے کہا کہ موجودہ دور میں حصول انصاف اور انسانیت کی بقاء کیلئے بلا تفریق مذہب و ملت بقائے انسانیت کیلئے باضابطہ مہم چلانے کی ضرورت ہے تاکہ برادران وطن اور اقلیتی طبقہ کے درمیان پیدا کی جارہی دوریوں کا سدباب ہوسکے ،اور قومی یکجہتی اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی برقراررہ سکے، جس کے پیش نظر فائونڈیشن کی جانب سے 31دسمبر کو وشال کھنڈ گومتی نگر میں ،،انسانیت مہم کانفرنس ،،منعقد کی جارہی ہے جس میں سبھی مسلک و مشرب کے رہنمائوں اور سیاست داں حضرات شرکت کر رہے ہیں ، ایک دیگر سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ملک کے موجودہ حالات نا گفتہ بہ ہیں اور مرکزی سرکار کے ذریعہ اقلیتوں کو ہراساں کیا جارہا ہے ، جو ارباب ملت کیلئے لمحہ فکریہ ہے ، انہوں نے 31دسمبر کو پیکٹ لکھنؤ کے عنوان پر جو کانفرنس منعقد ہوئی تھی ، اس کی صد سالہ تقریب آئندہ 31دسمبر 2016کو منعقد کی جارہی ہے جس میں ملک میں قومی ایکتا اور انسانیت سازی پر زور دیا جائے گا ۔اور ہندو مسلم کے درمیان پیدا کی جارہی دوریوں کو ختم کیا جائے گا ، انہوں نے بتایا کہ کانفرنس کے بعد ایک آل انڈیا مشاعرہ ہوگا جس کے ذریعہ قومی یکجہتی کے پیغام کو عام کیا جائے گا ۔انہوں نے پروگرام کے مقصد پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ 1916کو لکھنؤ میںمحبان وطن نے لکھنؤ میں کیا تھا لہذا اس کی صد سالہ جشن سلور جبلی تقریب کے طور پر منائی جارہی ہے ۔جس کی تیاریاں شباب پر ہیں اور ہمیں نامور مذہبی علماء اور دانشوران ملت کی منظوری مل چکی ہے ، نیز برادران وطن کے سادھو سنت حضرات کانفرنس میں شرکت کر رہے ہیں ۔پریس کانفرنس کے دوران مولانا نجیب احمد ململی ندوی ، حافظ سید وصی احمد ،آصف علی ، ایڈوکیٹ وغیرہ موجود رہے

Share this:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *